معجزاتِ عیسیٰ

1۔عیسیٰ مسیح کی لاثانیت :

حضرت عیسیٰ مسیح ہی دُنیا میں واحدِ  شخصیت ہیں جنہوں نے انسانیت کی تکلیفوں ،مشکلات اور درد کو سمجھااور ہر تکلیف کو دورکیا تا کہ لوگوں کےلئے آسانیاں پیدا کی جا سکیں اور اُن کا ایمان اپنے پروردِگار کی ذات پر قائم ہو سکے کیونکہ وہ ہر چیز پر قادر ہے ۔آپ پر جب شیطان کی طرف سے آزمائش آئی اورآپ  روزہ کی حالت میں تھے تو تب ابلیس نے کہا کہ اپنی بھوک کو مٹانے کے لئے معجزہ کریں تو آپ نے ایسا کرنے سے انکار کر دیا ۔ آپ کی تعلیم بھی یہی ہے کہ “ہاں ” کی جگہ ہاں اور “نہ” کی جگہ نہ کریں اور ایسا نہ کرنے کی وجہ سے انسان آزمائشوں میں پھنس جاتے ہیں ۔

2۔ عیسیٰ مسیح کے معجزات :

ا۔ قدرت پر اختیار:

آپ ہوَا اور پانی کو بھی حکم دیتے تھے تو وہ آپ کا کہنا مانتے تھے ۔ ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ آپ کشتی میں سو رہے تھے کہ طوفان آ گیا اورکشتی پانی میں ڈوبنے لگی اور اُس میں بیٹھے تمام مسافر ڈر گئے۔ کِسی نےکہاکہ اس آدمی کو کوئی فِکر نہیں ہے کہ ہم ہلاک ہو رہے ہیں اور یہ مزے سے سو رہا ہے۔ تب آپ نےاٹھ کر ہوَا اور پانی کو ڈانٹا اورطوفان ایک دم تھم گیا اور کشتی میں بیٹھے سب لوگ حیران تھے کہ یہ کس طرح کا آدمی ہے کہ ہوَا اور پانی بھی اِس کا حکم مانتے ہیں۔

ب۔ شیاطین پر اختیار :

آپ نے بہت سارے لوگوں کو جو بدروحوں کی قید میں تھے اُن کو رہائی بخشی اور وہ معمول کی زندگی گزارنے لگے کیونکہ شیطان انسان کومختلف طر یقوں سے جکڑ لیتا ہے اور اُس سے جان چھڑانا  اورجینا مشکل ہو جاتا ہے ۔

ج۔ بیماریوں سے شفا:

آپ نے فالج کے مریضوں کو شفادی ، معزوروں کو ٹھیک کیا،آدمی کے سوُکھےہوئے ہاتھ کو درست کر دیا ، کبڑُاپن  دورکیا، جرَیانِ خون ،بخاراور جلندر سے شفا بخشی،گوُنگے کی زبان کھولی اور اندھوں کو بینائی دی ۔ بہروں کے کان کھول دئیےاور کوڑھیوں کو کوڑھ سے پاک کر دیا۔

د۔مرُدوں کو زندہ کرنا:

آپ نے لعزر نامی چا ردِن کےمرے ہوئے شخص کو زندہ کیا جس کی قبر سے بھی بدبوُ آتی تھی ۔ آپ نے ایک سردار کی بیٹی کو زندہ کیا  ۔ ایک دفعہ ایک مرُدہ  کو قبرستان میں دفن کرنے کے لئے لے جا رہے تھے ۔ وہ لڑ کا ایک بیوہ کا اکلوتا بیٹا تھا تو عیسیٰ علیہ السلام  کواُن پر ترس آیاتو  آپ نےجنازہ کو چھواُ اور اٹھانے والے کھڑے ہو گئے اور آپ نے نوجوان سے کہا کہ اُٹھ اور وہ مرُدہ اُٹھ بیٹھا اور بولنے لگا ۔ آپ نے اُس کواُس کی ماں کو سونپ دیا۔

ہ۔مختلف معجزات:

آپ نے پانی کو انگوروں کے تازہ رس میں تبدیل کر دیا  اورگھر والوں کو ذلت و رسوائی سے بچایا۔  صرف دو مچھلیوں اورپانچ روٹیوں سےپانچ ہزار لوگوں کو ایک وقت میں معجزانہ طو ر کھانا کھِلایا اور دوسری بار چار ہزار لو گوں کو اور وہ کھا کر سیر اور آسودہ ہوئے لیکن اِس کے باوجود کھانے کی بارہ ٹوکریاں بچ گئیں، پانی پر چلنا ، مچھلی کے منہُ سے سکہ ّ نکلوانا، کثرت کے ساتھ مچھلیاں پکڑوانا  اورمو ت پر فتح پانا  یہ سب آپ کے معجزات کی مثالیں ہیں۔ ہمارا خیال ہے کہ اُن کی شخصیت کے اہم پہلو کو سمجھنے اور ہماری راہنمائی کےلئے کافی ہیں۔

3۔عیسیٰ علیہ السلام کے معجزات کی صداقت:

اُن کے تمام معجزات بہت سارے لوگوں کی موجودگی میں اور اعلانیہ ہوئے تا کہ اِن کی سچائی کی تصدیق ہو سکےاور اِن کو بہت ہی آسان زبان اور بِناکسی سنسنی کے بیان کیا  گیا ہے۔سائنسدانوں اور ڈاکٹروں نے شِفا کے معجزات کو کبھی غلط ثابت نہیں کیا  اوراُن کے معجزات لاثانی  اور بے مثال تھے۔ دُنیا کی تاریخ میں کوئی  بھی اُن جیسےمعجزات نہیں دِکھا سکا  اور آپ نے کبھی کوئی معجزہ غیر مناسب یا غیر اخلاقی طو ر پر نہیں دکھایااور اُس کے مقاصد ہمیشہ انسانیت کی بھلائی اور بہتری کے ہوتے تھے اور شِفا فوری اور فوقُ الفطرت ہوتی تھی۔ حضرت یحیٰ علیہ السلام کو آپ نے اپنے معجزات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ میں“مسیح مَوعُود”ہوں اور میں ہی بنی نوع انسان کامسیحا ہوں ۔

4۔معجزات کی اہمیت :

حضرت عیسیٰ مسیح علیہ السلام نے معجزات اِس لئے کئے تا کہ وہ اپنی لاثانی ذات کو دُنیا پر ظاہر کر سکیں اور لوگ اُن پر ایمان لائیں کہ وہی بنی نوع انسان کے اصل راہنماہ، ہادی اور نجات دہندہ ، جنت الفردوس جانے  کاوسیلہ اور ابدی زندگی ہیں ۔

معجزے کی دعا:

اگر آج بھی ہم ایمان کے ساتھ حضرت عیسیٰ مسیح کے نام کے صدقے اللہ تعالیٰ سے کسی بھی بیماری سے شِفا ،پریشانی یا  مشکل کے حل کے لئے   دعا مانگتے ہیں تووہ  پروردِگار کی بارگاہ میں قبول ہو جاتی ہے  اور اُن کے نام سے آج بھی معجزات ہوتے ہیں ۔

ایمان کے ساتھ اپنی آنکھیں بند کریں  اور کہیں ! اے میرے پروردِگار مجھے اپنے پیارے محبوب سیدّنا عیسیٰ مسیح کےوسیلہ (بیماری ، دُکھ تکلیف یا مرض کانام لیں) سے مکمل اور کامِل شِفا عطاکر   اور میری (پریشانی یا مشکل کا نام لیں)کو حل فرما دے ۔ میری  زندگی میں بھی آج معجزہ کر تا کہ میں بھی دوسرے انسانوں کی طرح نارمل زندگی گزار سکوں آمین۔ دعاکرنے سے آپ کے بدن میں شفا کا عمل شروع ہوجاتا اور پریشانی بھی حل ہوناشروع ہو جاتی ہے ۔ آپ دعا کی درخواست ہمیں ای میل کر سکتے ہیں اورہم آپ کے لئے دعا جاری رکھیں گے اورہمیں آپ کی گواہی کاانتظار رہے گا۔